کنٹونمنٹ بورڈ کے انتخابات میں پی ٹی آئی فاتح

کنٹونمنٹ بورڈ کے انتخابات میں پی ٹی آئی فاتح

کنٹونمنٹ بورڈ کے انتخابات میں پی ٹی آئی فاتح۔

حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف اتوار کو ملک بھر میں ہونے والے کنٹونمنٹ بورڈ کے انتخابات میں سرکردہ جماعت بن کر ابھری۔

غیر سرکاری ابتدائی نتائج کے مطابق پی ٹی آئی نے 63 نشستیں حاصل کی ہیں۔ جبکہ مرکزی اپوزیشن جماعت پاکستان مسلم لیگ نواز (مسلم لیگ ن) نے 59 نشستیں حاصل کی ہیں۔ آزاد امیدواروں نے 52 نشستیں حاصل کی ہیں۔

دوسری سیاسی جماعتوں کی جیتی ہوئی نشستوں کی تعداد حسب ذیل ہے: پی۔ پی۔ پی۔ 17 ، جماعت اسلامی سات اور عوامی نیشنل پارٹی دو۔

اس وقت تحریک انصاف کے ساتھ اتحاد کرنے والی جماعتوں میں سے ایم۔ کیو۔ ایم۔ نے 10 اور بلوچستان عوامی پارٹی نے دو نشستیں حاصل کیں۔

اس سے قبل پاکستان بھر میں کنٹونمنٹ بورڈز میں بلدیاتی انتخابات کے لیے پولنگ ہوئی ، 206 وارڈز میں 1560 امیدوار ایک دوسرے کے مدمقابل تھے۔

پولنگ صبح 8 بجے شروع ہوئی اور شام 5 بجے تک بغیر کسی وقفے کے جاری رہی۔

2

تمام اہم سیاسی جماعتوں نے اپنے امیدوار کھڑے کر دیے ہیں جبکہ اہم مقابلہ حکمران پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) ، پاکستان مسلم لیگ نواز (مسلم لیگ (ن) اور پاکستان پیپلز پارٹی (پی۔ پی۔ پی۔) کے درمیان متوقع ہے۔

پی ٹی آئی نے چاروں صوبوں میں 170 سے زائد امیدوار کھڑے کیے ہیں۔ اس کے بعد ن لیگ کے 140 اور پیپلز پارٹی کے 112 امیدوار ہیں۔ چاروں صوبوں میں جماعت اسلامی کے 105 امیدوار میدان میں ہیں۔

متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) اور پاک سرزمین پارٹی (پی۔ ایس۔ پی۔) نے کراچی اور حیدرآباد کے کنٹونمنٹ بورڈز میں بالترتیب 41 اور 33 امیدوار کھڑے کیے ہیں۔

دریں اثنا ، کالعدم تحریک لبیک پاکستان (ٹی۔ ایل۔ پی۔) سمیت قوم پرست اور مذہبی جماعتیں بھی چاروں صوبوں میں انتخاب لڑ رہی ہیں۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان کے مطابق 1،644 پولنگ اسٹیشنوں میں 5000 سے زائد پولنگ بوتھ قائم کیے گئے ہیں۔ تمام کنٹونمنٹ بورڈز میں 1،154،551 مرد اور 1،043،190 خواتین سمیت کل 2،197،441 ووٹر رجسٹرڈ ہیں۔

کامرہ ، چراٹ اور مری چھاؤنیوں میں پولنگ کا کوئی شیڈول نہیں ہے۔ اس کے علاوہ مختلف کنٹونمنٹ بورڈز کے کئی وارڈز میں امیدوار پہلے ہی بلا مقابلہ منتخب ہو چکے ہیں۔

پنجاب میں 19 چھاؤنیوں کے 112 وارڈز میں 878 امیدوار ، سندھ میں آٹھ چھاؤنیوں کے 53 وارڈوں میں 418 ، خیبر پختونخواہ کے 9 چھاؤنیوں کے 33 وارڈوں میں 170 امیدوار اور تین چھاؤنیوں کے آٹھ وارڈوں میں 47 امیدوار میدان میں ہیں۔ بلوچستان۔

..مزید پڑھیں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں