پاکستانی اولمپئن ارشد ندیم کی وطن واپسی۔

پاکستانی اولمپئن ارشد ندیم کی وطن واپسی۔

پاکستانی اولمپئن ارشد ندیم کی وطن واپسی۔

پاکستان کے اسٹار ایتھلیٹ ارشد ندیم ٹوکیو اولمپکس 2020 میں شاندار کارکردگی دکھانے کے بعد پاکستان پہنچے ہیں۔

اگرچہ ٹریک اینڈ فیلڈ کھلاڑی دنیا کے سب سے بڑے سپورٹس فیسٹیول میں تمغہ نہیں جیت سکا۔ لیکن وسائل نا ہونے کے باوجود اپنی غیر معمولی پرفارمنس سے انہوں نے لاکھوں پاکستانیوں کے دل جیت لیے ہیں۔

ارشد ندیم کا طیارہ لاہور کے علامہ اقبال انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر صبح 1:30 بجے اترا۔

کھیلوں کے شائقین کی بڑی تعداد ارشد کی آمد سے قبل اس کے استقبال کے لیے ائیرپورٹ پر جمع تھی۔ اس کے پہنچتے ہی خوشی اور بلند نعروں نے ہوا بھر دی۔

پنجاب کے وزیر یوتھ اینڈ سپورٹس رائے تیمور خان بھٹی ، ایتھلیٹکس فیڈریشن پاکستان کے صدر ، کوچز اور کھلاڑیوں نے ایئرپورٹ پر ان کا استقبال کیا۔

2

ارشد نے اسپورٹس بورڈز کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے ان کی سرپرستی کی۔
ارشد ندیم نے ہوائی اڈے پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان تمام لوگوں کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے ان کے لیے دعا کی۔

انہوں نے کہا کہ مجھے لوگوں کی دعاؤں کی وجہ سے دنیا میں شہرت ملی۔ میں اپنی کوتاہیوں کو دور کروں گا اور مستقبل میں بہترین کھیل کھیلوں گا۔

ارشد ندیم نے اس عزم کا بھی اظہار کیا کہ وہ مستقبل میں اپنی کارکردگی سے اپنے مداحوں کو مایوس نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ میں نے سخت محنت کی اور پانچویں نمبر پر آیا۔

ایتھلیٹ نے یہ بھی کہا کہ وہ پاکستان سپورٹس بورڈ اور پنجاب بورڈ کے شکر گزار ہیں اور ان کی سرپرستی پر اداروں سے اطمینان کا اظہار کیا۔

پنجاب کے وزیر کھیل نے ارشد ندیم کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ اس نے ہمیں فخر کیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کو عالمی سطح پر پذیرائی ملی۔

پاکستان میں کھیلوں کی سرگرمیوں کو فروغ دینے کے لیے حکومت کی مدد ضروری ہے۔

..مزید پڑھیں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں