بھارتی کرکٹ بورڈ کی غیر ملکی کھلاڑیوں کو کشمیر پریمیئر لیگ میں شمولیت پر دھمکیاں۔

بھارتی کرکٹ بورڈ کی غیر ملکی کھلاڑیوں کو کشمیر پریمیئر لیگ میں شمولیت پر دھمکیاں۔

بھارتی کرکٹ بورڈ کی غیر ملکی کھلاڑیوں کو کشمیر پریمیئر لیگ میں شمولیت پر دھمکیاں۔

پاکستان کے سابق کرکٹر راشد لطیف نے جمعہ کے روز دعویٰ کیا۔ کہ بھارتی کرکٹ پورڈ – بورڈ آف کنٹرول فار کرکٹ ان انڈیا (بی ۔سی۔ سی۔ آئی۔) اپنے کھلاڑیوں کو کشمیر پریمیئر لیگ (کے۔ پی۔ ایل۔) کے آئندہ پہلے ایڈیشن میں حصہ لینے کی اجازت دینے سے متعلق کرکٹ بورڈز کو وارننگ بھیج رہا ہے۔

ٹویٹر پر جاتے ہوئے لطیف نے مزید کہا کہ جو کھلاڑی کے پی ایل میں شرکت کرتے ہیں۔ جو کہ 6 اگست سے مظفر آباد میں شروع ہو رہا ہے۔ بی سی سی آئی ان غیر ملکی کرکٹرز کو بھارت میں کام کرنے کی اجازت نہیں دے گا۔

“بی سی سی آئی کرکٹ بورڈز کو خبردار کر رہا ہے کہ اگر وہاں سابق کھلاڑیوں نے کشمیر پریمیئر لیگ میں حصہ لیا۔ تو انہیں بھارت میں داخلے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ اور نہ ہی کسی بھی سطح پر یا کسی بھی حیثیت سے ہندوستانی کرکٹ میں کام کرنے کی اجازت دی جائے گی۔ گبز ، دلشان ، مونٹی پنیسر اور کئی دیگر کو کے پی ایل میں منتخب کیا گیا ہے۔

سری لنکا کے سابق کپتان تلکارتنے دلشان۔ جنوبی افریقہ کے سابق کرکٹر ہرشل گبز۔ سابق سری لنکن کپتان تلکرتنے دلشان کے ساتھ انگلینڈ کے چار سابق کھلاڑیوں کو کے۔ پی۔ ایل۔ کی چھ ٹیموں میں شامل کیا گیا ہے۔

دریں اثناء مظفر آباد ٹائیگرز کے مالک ارشد خان تنولی نے تصدیق کی کہ سری لنکا کے سابق کپتان تلکار دلشان مکمل ٹورنامنٹ میں شرکت کریں گے۔

..مزید پڑھیں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں