پیٹرولیم کی قیمتیں تاریخی سطح پر پہنچنے پر ٹرانسپورٹرز نے کرایوں میں 20 فیصد اضافہ کر دیا۔

پیٹرولیم کی قیمتیں تاریخی سطح پر پہنچنے پر ٹرانسپورٹرز نے کرایوں میں 20 فیصد اضافہ کر دیا۔

پیٹرولیم کی قیمتیں تاریخی سطح پر پہنچنے پر ٹرانسپورٹرز نے کرایوں میں 20 فیصد اضافہ کر دیا۔

لاہور – پیٹرولیم کی قیمتیں تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچنے کے بعد ٹرانسپورٹرز نے کرایوں میں 20 فیصد اضافے کا اعلان کیا ہے۔

آل پاکستان پبلک ٹرانسپورٹ اونرز فیڈریشن کا کہنا ہے کہ کرائے میں اضافہ پیٹرولیم کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے کے ردعمل میں کیا گیا ہے۔

اس نے اعلان کیا کہ ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے صرف 50 فیصد ٹرانسپورٹ کام کرے گی، ملازمین کو بھی نکال دیا جائے گا۔

گزشتہ رات، نئی حکومت نے 30 روپے اضافے کے اعلان کے بعد ایک ہفتے میں پیٹرول کی قیمتوں میں 30 روپے کا اضافہ کرکے ریکارڈ 209.86 روپے فی لیٹر کردیا تھا۔

اسی ہفتے میں دوسرے اضافے کے ساتھ پیٹرول کی قیمت 209.86 روپے، ڈیزل کی قیمت 204.15 روپے ہوگئی۔ مٹی کے تیل کی قیمت 26.38 روپے فی لیٹر کے فرق کے ساتھ 181.94 روپے فی لیٹر ہو گئی ہے۔

وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے انکشاف کیا کہ یہ سخت قدم بین الاقوامی منڈی میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے پیش نظر اٹھایا گیا، جس سے یہ بات سامنے آئی کہ حکومت بڑے پیمانے پر اضافے کے باوجود خسارے میں ہے۔

مسلم لیگ (ن) کے رہنما نے کہا کہ حکومت کو معلوم ہے کہ اس فیصلے سے مہنگائی میں مزید اضافہ ہوگا، اقدام کو لازمی قرار دیتے ہوئے

مزید پڑھنے کے لیے یہاں پر کلک کریں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں