سابق ایس ایس جی کمانڈو عمران خان کا سیکیورٹی انچارج مقرر پی ٹی آئی سربراہ کو ‘جان سے مارنے کی دھمکیوں’ کا سامنا

سابق وزیراعظم عمران خان پی ٹی آئی کے دوبارہ چیئرمین بلامقابلہ منتخب ہوگئے۔

سابق ایس ایس جی کمانڈو عمران خان کا سیکیورٹی انچارج مقرر پی ٹی آئی سربراہ کو ‘جان سے مارنے کی دھمکیوں’ کا سامنا

اسلام آباد – سپیشل سروس گروپ کے ایک سابق کمانڈو کو پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا سکیورٹی انچارج مقرر کر دیا گیا ہے جنہوں نے کہا کہ ان کی جان کو خطرہ ہے۔

مقامی میڈیا کی رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ لیفٹیننٹ کرنل (ر) عاصم کو پاکستان کے معزول وزیراعظم عمران خان کے لیے چیف سیکیورٹی آفیسر کے طور پر منتخب کیا گیا ہے۔

یہ اقدام ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب شریف کی قیادت والی حکومت نے سابق حکمران جماعت سے کرکٹر سے سیاستدان بننے کے چونکا دینے والے انکشافات کے بعد فوکل پرسن کا تقرر کرنے کا مطالبہ کیا تھا۔

سیالکوٹ کے جلسے کے دوران پی ٹی آئی کے سربراہ نے دعویٰ کیا کہ ان کی جان لینے کی سازش کی جا رہی ہے اور انہوں نے ایک کلپ ریکارڈ کیا جس میں تمام سازشیوں کے نام درج تھے۔ خان نے یہ بھی انکشاف کیا کہ اگر انہیں کچھ ہوا تو ویڈیو کو پبلک کیا جائے گا۔

کھلے عام سیاست دان کے دعوؤں کے بعد نئے لگائے گئے وزیر اعظم شہباز شریف نے اجلاس بلایا اور سابق وزیر اعظم کو درپیش سیکیورٹی خطرات کا جائزہ لیا۔ مبینہ طور پر شریف نے اسلام آباد میں اپنے گھر اور سیاسی جلسوں کے دوران فول پروف سیکیورٹی کا حکم دیا۔

اطلاعات کے مطابق عمران خان کی ذاتی رہائش گاہ کی سیکیورٹی کے لیے تقریباً 94 پولیس اور فرنٹیئر کانسٹیبلری (ایف سی) کے اہلکار تعینات کیے گئے ہیں۔

ان کے سفر کے دوران اسلام آباد پولیس کی چار گاڑیاں اور 23 اہلکار جبکہ ان کی سیکیورٹی کے لیے ایک گاڑی اور پانچ رینجرز اہلکار تعینات ہوں گے۔

مزید پڑھنے کے لیے یہاں پر کلک کریں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں