مجھے کچھ ہوا تو پاکستانی عوام انصاف دلوائیں گے، عمران خان

مجھے کچھ ہوا تو پاکستانی عوام انصاف دلوائیں گے، عمران خان

مجھے کچھ ہوا تو پاکستانی عوام انصاف دلوائیں گے، عمران خان

فیصل آباد جلسے میں عمران خان کا کہنا تھا قوم حقیقی آزادی کے لیے گھروں سے باہر نکل رہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ امپورٹڈ حکمرانوں سے حکومت سنبھالی نہیں جارہی۔ روپے کی قدر دن بدن گر رہی ہے اور ڈالر کی قیمت میں اضافہ ہو رہا ہے۔ اسٹاک مارکیٹ میں مندی کا رجحان ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جب یہ اپنے محلوں سے باہر نکلتے ہیں تو لوگ ان کو دو الفاظ سے پکارتے ہیں چور اور غدار۔ یہ قوم میرے ساتھ مل کر ملک کو ان چوروں سے آزاد کروانے کی جنگ لڑ رہی ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اس حکو مت میں وزارت اس کو ملتی ہے جو سب سے بڑا مجرم ہو۔ میرے علم میں تھا رانا سنااللہ 18 افراد کے قاتل ہیں، لیکن اب معلوم ہوا کہ وہ تو 22 بے گناہ افراد کے قاتل ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اس ملک کا سب سے بڑا چور گارڈ فادر بن کے بیٹھا ہوا ہے۔

عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ چند دن قبل معلوم ہوا کہ بند کمروں میں میرے خلاف سازش کی جارہی ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ جب بھی کوئی حکومت جاتے ہے تو مٹھائیاں بانٹیں جاتی ہیں، لیکن جب ہماری حکومت گئی تو لوگ ہمارے ساتھ سڑکوں پر نکل آئے اور اسلام آباد چلنے پر بھی راضی ہوگئے۔

ان کا کہنا تھا کہ قوم کی سپورٹ ہمارے ساتھ دیکھ کر سازشی ٹولہ خوفزادہ ہو گیا اور فیصلہ کیا کہ اب عمران خان کو اس دنیا سے ہی فارغ کر دیتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا اس ملک میں انصاف کا نظام بہت کمزور ہے ، جب لیاقت علی خان قتل کیے گئے، ذولفقار علی بھٹو کو تخت دار پر لٹکایا گیا، بینظیر بھٹو کو قتل کیا گیا اور ضیاالحق کا طیارہ تباہ کیا گیا، ان سب کو پیچھے کون تھا، آج تک معلوم نہیں ہوا۔

ہمارے حکومت کے ختم کرنے کے پیچھے بیرون طاقتوں کا ہاتھ تھا اور ان کے سہولتکار اس ملک کے میر جعفروں، اور میر صادقوں تھے۔سب سے بڑے چوروں اور ڈاکوؤں کو اس قوم پر مسلط کیا گیا۔یہ اس قوم کی توہین کے ساتھ ساتھ اس ملک کو برباد کرنے کی شازش ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کہنا تھا کہ ان کے خلاف تحقیقات کرنے والے ایف آئی اے کے افسر ڈاکٹر رضوان کو دل کا دورہ پڑا اور وہ اس فانے جھان سے کونچ کر گئے۔

ان کا کہنا تھا کہ میں اس زہر کے بارے میں جانتا ہوں جس کو کھانے میں دیا جائے تو اس شخص کو دل کو دورہ پرتا ہے۔ میں اپنے اعلیٰ عدلیہ سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ اس بات پر ازخود نوٹیس لے۔

مزید پڑھنے کے لیے یہاں پر کلک کریں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں