ایف آئی اے نے سوشل میڈیا پر ‘جارحانہ اور فتنہ انگیز’ مواد پوسٹ کرنے سے خبردار کیا۔

عامر لیاقت کی نوعمر بیوی دانیہ شاہ 'تشدد کی زندگی' شیئر کرتے ہوئے رو پڑیں (ویڈیو)

ایف آئی اے نے پاکستانی تارکین وطن کو سوشل میڈیا پر ‘جارحانہ اور فتنہ انگیز’ مواد پوسٹ کرنے سے خبردار کیا۔

اسلام آباد – وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے خبردار کیا ہے کہ پاکستانی نژاد تارکین وطن کے نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں ڈالے جا سکتے ہیں اگر وہ سوشل میڈیا پر کوئی ایسی “جارحانہ اور فتنہ انگیز” پوسٹ کرتے ہیں جس سے پاکستان میں افراتفری پھیل سکتی ہے۔

“پاکستان سے باہر رہنے والے تمام پاکستانی نژاد تارکین وطن کو مشورہ دیا جاتا ہے کہ وہ بیرون ملک رہتے ہوئے پاکستان میں افراتفری پھیلانے سے باز رہیں۔ ایف آئی اے کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا کہ ان کی سوشل میڈیا پوسٹس جارحانہ اور بغاوت پر مبنی نہیں ہونی چاہئیں۔

ترجمان نے تارکین وطن کو مشورہ دیا کہ وہ “پاکستان الیکٹرانک کرائمز ایکٹ 2016 (PECA)” کا مطالعہ کریں تاکہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ ان کی سوشل میڈیا پوسٹس “کوئی جرم نہیں بنتی”۔

اگر وہ کوئی جرم کرتے ہیں تو ان کی گرفتاری کے لیے ان کے خلاف انٹرپول کے ذریعے ریڈ نوٹس جاری کیے جا سکتے ہیں۔ ان کے نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں ڈالے جا سکتے ہیں۔ انہیں کسی بھی الیکٹرانک جرائم کے کمیشن سے بچنے کی ضرورت ہے، “ایف آئی اے نے کہا۔

انہوں نے کہا کہ یہ مشورہ صرف ان لوگوں کہ لیے ہے جو لوگ اس جرم میں شامل ہیں، باقی شریف لوگ کسی بھی قسم کا ڈر محسوس نہ کریں۔

ایف آئی اے نے کہا کہ “دنیا میں کہیں بھی رہنے والے کسی بھی شخص کی طرف سے پاکستان میں انتشار پیدا کرنے یا کسی قدرتی شخص کے وقار کو مجروح کرنے یا جعلی خبروں یا جعلی ویڈیوز کے ذریعے کسی فطری شخص کی شان کے خلاف کام کرنے کی کوششیں پاکستان کے قوانین کے خلاف ہیں۔”

ایف آئی اے کی طرف سے کہا گیا ہے کہ اس طرح غیر قانونی کوششیں نہ کی جائیں ورنہ اس طرح کے لوگوں کے خلاف سخت قانونی کاروائی کی جائے گی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ لہذا ہم اپنی پاکستانی قوم کو یہ مشورہ دیتے ہیں کہ وہ اس طرح کی میڈیا پر پھلائی جانے والی ہرزہ سرائی سے دور رہیں اور اس جرم کے کرنے سے خُد کو دور رکھیں۔

مزید پڑھنے کے لیے یہاں پر کلک کریں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں