عامر لیاقت نے دانیہ شاہ کے الزامات کا جواب دے دیا۔

عامر لیاقت نے دانیہ شاہ کے الزامات کا جواب دے دیا۔

عامر لیاقت نے دانیہ شاہ کے الزامات کا جواب دے دیا۔

یہ خبر سامنے آنے کے فوراً بعد کہ عامر لیاقت حسین کی تیسری بیوی دانیہ شاہ نے اپنے شوہر پر سنگین الزامات عائد کر دیے ہیں اور طلاق کے لیے درخواست دائر کر دی ہے، مارننگ شو کے میزبان نے سوشل میڈیا پر اس معاملے پر اپنا رخ بیان کیا۔

حسین نے اس بات سے انکار کیا کہ وہ منشیات یا الکحل لیتا ہے اور طلاق کے معاملے میں ثبوت کے طور پر عدالت میں چونکا دینے والی آڈیو اور ویڈیوز پیش کرنے کا عہد کیا۔ انہوں نے کہا کہ شاہ ان کی ٹک ٹاک ویڈیوز باقاعدگی سے شوٹ کر رہے تھے اور وہ روزانہ کی بنیاد پر مختلف ریستورانوں سے ان کے پسندیدہ کھانے کا آرڈر دے رہے تھے اس لیے ان کے اس دعوے میں کوئی صداقت نہیں کہ انہیں بغیر کھائے ایک کمرے میں بند کر دیا گیا تھا۔

اس نے کہا کہ وہ اس دن الگ سونا شروع کر دیا جس دن دانیہ نے اسے بتایا کہ اس کی عمر 15 سال سے کم ہے۔ انہوں نے دانیہ پر کسی قسم کے جسمانی تشدد کی تردید کی اور کہا کہ وہ ساری زندگی خواتین کے حقوق کی وکالت کرتی رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ شادی کے وقت دانیہ کے گھر والوں نے اس سے جھوٹ بولا اور اسے اپنا جعلی شناختی کارڈ دکھایا۔

ان کا اس حوالے سے مزید کہنا تھا کہ وہ ڈرگ ٹیسٹ کروانے کے لیے تیار ہیں یہ ثابت کرنے کے لیے کہ وہ منشیات کے عادی شخص نہیں ہیں۔ وہ اس بات پر بھی بضد تھے کہ پھر دانیہ کو بھی بلوغت ٹیسٹ کروانا ہوگا تاکہ یہ معلوم ہو سکے کہ وہ شادی سے پہلے کنواری تھی یا نہیں اور اگر وہ کنواری نہیں تھی تو اس نے اپنا کنوارہ پن کس سے کھویا؟

عامر لیاقت کا کہنا تھا کہ دانیہ کی امی جان اور ان کے خاندان کے دیگر افراد پر تمام زیادہ اپنی آمدنی خرچ کر رہا ہے۔

اللہ اور اس کےرسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کو گواہ بنا کر میں عامرُلیاقت حسین اپنے دفاع میں قانونی طور پر عدالت کا نوٹس ملنے کے بعد جواب ضرور داخل کروں گا لیکن مختصراً کہنا چاہتا ہوں اور نشے اور تشدد جیسے بدترین الزامات کے بعد انتہائی شرم ساری سے وہ آڈیو پیفامات جاری کررہاُ ہوں اور عدالت میں تصاویر بھی ہیش کردوں جسے سننے کے بعد روح کانپ اٹھے ۔۔میں شراب پیتا ہوں نہ آئس کا نشہ کرتا ہوں چار ماہ کی شادی میں کمرے میں بند ہونے کے الزامات کے باوجود ٹک ٹاک پر پابندی سے ویڈیوز ش…

مزید پڑھنے کے یہاں پر کلک کریں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں