ایک اور پاکستانی ماڈل کو بھائی نے غیرت کے نام پر قتل کر دیا

ایک اور پاکستانی ماڈل کو بھائی نے غیرت کے نام پر قتل کر دیا

ایک اور پاکستانی ماڈل کو بھائی نے غیرت کے نام پر قتل کر دیا

اوکاڑہ – ضلع اوکاڑہ کے ایک گاؤں میں جمعرات کو ایک ماڈل کو اس کے بھائی نے مبینہ طور پر غیرت کے نام پر قتل کر دیا۔

اوکاڑہ کے گاؤں 51 آر میں سدرہ (22) کو اس کے بھائی نے اس وقت قتل کر دیا جب وہ عید الفطر منانے اپنے آبائی گاؤں گئی تھی۔

مقامی پولیس نے میڈیا کو بتایا کہ مقتول خاتون کی لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے جب کہ واقعے کی تحقیقات جاری ہیں۔

قتل کی وجہ بہن بھائیوں کے درمیان گرما گرم بحث بتائی جاتی ہے کیونکہ لڑکی اپنا ماڈلنگ کیریئر چھوڑنے پر آمادہ نہیں تھی۔ دوسری جانب قانون نافذ کرنے والے ادارے ابھی تک قاتل کو گرفتار نہیں کر سکے۔

جنوبی ایشیائی ملک سوشل میڈیا سنسیشن قندیل بلوچ کے وحشیانہ قتل کے بعد سرخیوں میں رہا جسے جولائی 2016 میں اس کے بھائی نے 26 سال کی عمر میں قتل کر دیا تھا۔

ہیومن رائٹس واچ نے دعویٰ کیا کہ پاکستان میں خواتین کے خلاف پرتشدد حملے ایک سنگین مسئلہ بنے ہوئے ہیں اور ملک بھر میں ہر سال کم و بیش ایک ہزار ایسے واقعات رپورٹ ہوتے ہیں۔

مزید پڑھنے کے لیے یہاں پر کلک کریں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں