بھارت میں حاملہ بکری اجتماعی زیادتی کے بعد مر گئی۔

بھارت میں حاملہ بکری اجتماعی زیادتی کے بعد مر گئی۔

بھارت میں حاملہ بکری اجتماعی زیادتی کے بعد مر گئی۔

چندی گڑھ – بھارت کی جنوب مغربی ساحلی ریاست میں ایک بے رحمانہ واقعے میں، ایک ہوٹل کے کارکن کو حاملہ بکری کے ساتھ جنسی زیادتی اور اسے مارنے کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔

بھارتی میڈیا کی رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ یہ واقعہ گزشتہ بدھ کو صبح کے اوقات میں پیش آیا جب ہوٹل کے عملے کو ایک مردہ بکری ملی جو پہلے اس ہولناک حرکت کے دوران خون بہا رہی تھی۔ ہوٹل کے عملے نے تین افراد کو موقع سے فرار ہونے کی کوشش کرتے ہوئے دیکھا۔

مجرموں میں سے ایک، جس کی شناخت سینتھیل کے نام سے ہوئی ہے، کو ہوٹل کے عملے نے پکڑا اور بعد میں اسے مقامی پولیس کے حوالے کر دیا گیا جبکہ تمام ملزمان کے خلاف جانوروں کے خلاف ظلم سے متعلق دفعہ کے تحت مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

یہ پالتو جانور مبینہ طور پر چار ماہ کی حاملہ تھی اور اس کا تعلق ایلیٹ ہوٹل سے تھا جہاں ملزم کافی عرصے سے کام کرتا تھا۔

دریں اثناء ویٹرنری سرجن نے تصدیق کی کہ جانور کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا جب کہ موت کی وجہ تفصیلی رپورٹ میں سامنے آئے گی۔

گزشتہ چند سالوں میں بھارت میں حیوانیت کے کئی واقعات رونما ہوئے ہیں جن کا شکار جانوروں کو کیا گیا۔

مزید پڑھنے کے لیے یہاں پر کلک کریں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں