پاکستان نے آسٹریلیا کو ہوم گراؤنڈ پر ون ڈے سیریز میں شکست دے دی۔

پاکستان نے آسٹریلیا کو ہوم گراؤنڈ پر ون ڈے سیریز میں شکست دے دی۔

پاکستان نے آسٹریلیا کو ہوم گراؤنڈ پر ون ڈے سیریز میں شکست دے دی۔

لاہور – پاکستانی ہٹرز نے شاندار مظاہرہ کرتے ہوئے سیریز کے فیصلہ کن تیسرے ون ڈے میں آسٹریلیا کو 9 وکٹوں سے شکست دی۔

نیتھن ایلس نے فخر زمان کو آؤٹ کیا جب میزبان ٹیم نے 211 کے تعاقب میں عمدہ آغاز کیا تاہم بابر اعظم نے سنچری سکور کی جبکہ امام نے سنگ میل عبور کیا۔

اس سے قبل، پاکستان نے آسٹریلیا پر مکمل کنٹرول برقرار رکھا اور ہفتے کو لاہور کے قذافی اسٹیڈیم میں تیسرے اور آخری ون ڈے میں میزبان ٹیم کو 210 تک محدود کردیا۔

شاندار بلے باز اور ون ڈے کے سرفہرست کھلاڑی بابر نے دوسری بار سنچری بنائی، جبکہ امام الحق نے ناقابل شکست نصف سنچری بنا کر ہوم سائیڈ کو بیس سال بعد پہلے ایک روزہ بین الاقوامی میچ میں کینگروز کو شکست دی۔

گرین میں مردوں نے آرام سے آخری کھیل کے 38ویں اوور میں نو وکٹوں کے ساتھ فتح کی راہ ہموار کی۔ بابر اور امام نے پاکستانی بیٹنگ لائن کو تاریخی فتح سے ہمکنار کیا اور 190 رنز کی ناقابل شکست شراکت قائم کی۔

پاکستانی کپتان 115 گیندوں پر 12 چوکوں کی مدد سے ناقابل شکست 105 رنز کے ساتھ ٹیم کے لیے ٹاپ اسکورر رہے، جبکہ امام 100 گیندوں پر چھ چوکوں اور ایک زبردست شاٹ سمیت 89 رنز کے ساتھ ناٹ آؤٹ رہے۔

دوسری جانب کینگروز نے پہلے بیٹنگ کرنے کے بعد 42ویں اوور میں آؤٹ ہونے سے قبل 210 رنز بنائے۔ فنچ کی قیادت میں اسکواڈ کا آغاز خراب رہا کیونکہ اس نے اپنی پہلی تین وکٹیں محض چھ رنز پر گنوا دیں۔

ٹریوس ہیڈ اور کپتان فنچ صفر پر ہی پویلین لوٹ گئے، جب کہ مارنس لیبوشگن نے صرف چار رنز بنائے۔

جیسے ہی اوپنرز گرے، بین میک ڈرموٹ نے مارکس اسٹوئنس کے ساتھ 53 رنز کی شراکت میں مہمانوں کی مدد کی۔ سٹوئنس اور میک ڈرموٹ دونوں بعد میں 16ویں اوور سے پہلے آؤٹ ہو گئے۔

ایلکس کیری اور آل راؤنڈر کیمرون گرین نے پھر چھٹے اور چھٹی وکٹ کے لیے 81 رنز جوڑے۔ شان ایبٹ نے 40 گیندوں پر 49 رنز بنائے کیونکہ ٹیل اینڈرز جلد ہی واپس لوٹ گئے۔

محمد وسیم جونیئر اور حارث رؤف نے تین تین وکٹیں حاصل کیں جب کہ شاہین شاہ آفریدی نے دو وکٹیں حاصل کیں۔ زاہد محمود اور افتخار احمد نے ایک ایک سکلپ کیا۔

اس سے پہلے آج، مین ان گرین نے تین میچوں کی سیریز کے تیسرے اور آخری ون ڈے انٹرنیشنل میں آسٹریلیا کے خلاف ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کا فیصلہ کیا۔

پاکستانی ٹیم نے دوسرے میچ میں ون ڈے میں ان کا سب سے زیادہ رنز کا تعاقب کرتے ہوئے 349 رنز کا تاریخی تعاقب کیا۔

پاکستان کے کپتان بابر اعظم اور اوپنر امام الحق نے شاندار اننگز کھیل کر اپنی ٹیم کو ون ڈے کرکٹ میں اپنے اب تک کے سب سے زیادہ رنز کا تعاقب کرنے میں مدد فراہم کی اور اس عمل میں گزشتہ روز لاہور میں آسٹریلیا کے خلاف تین میچوں کی ون ڈے سیریز برابر کر دی۔

اس سے قبل منگل کو کینگروز نے پہلے ون ڈے میں میزبان ٹیم کو 88 رنز سے شکست دی تھی۔

دستے

پاکستان: بابر اعظم (سی)، امام الحق، شاداب خان، خوشدل شاہ، عبداللہ شفیق، محمد نواز، آصف علی، محمد رضوان (ڈبلیو کے)، محمد وسیم جونیئر، حیدر علی، سعود سکیل، حارث رؤف، شاہین آفریدی ، حسن علی، شہنواز دہانی، افتخار احمد، عثمان قادر۔

آسٹریلیا: ایرون فنچ (سی)، شان ایبٹ، ایڈم زمپا، ایشٹن آگر، بین میک ڈرموٹ، جیسن بہرنڈورف، مارکس اسٹوئنس، الیکس کیری (ڈبلیو کے)، مِتھسیل سویپسن، بین دوارشوئس، مارنس لیبوشین، ناتھن ایلس، کیمرون گرین، ٹریوس ہیڈ، جوش انگلیس (WK)۔

مزید پڑھنے کے لیے یہاں پر کلک کریں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں