مانسہرہ کی خاتون اسسٹنٹ کمشنر کو ہراساں کرنے اور حملہ کرنے والے تین افراد کے خلاف مقدمہ درج

مانسہرہ کی خاتون اسسٹنٹ کمشنر کو ہراساں کرنے اور حملہ کرنے والے تین افراد کے خلاف مقدمہ درج

مانسہرہ کی خاتون اسسٹنٹ کمشنر کو ہراساں کرنے اور حملہ کرنے والے تین افراد کے خلاف مقدمہ درج

پشاور – مانسہرہ کی اسسٹنٹ کمشنر ماروی ملک شیر کو مبینہ طور پر ہراساں کرنے اور حملہ کرنے والے تین افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

مقامی میڈیا رپورٹس کے مطابق ماروی پر تین افراد نے حملہ کیا تھا اور انہیں 18 مارچ کو حراست میں لیا گیا تھا۔

ملزم نے ماروی کی گاڑی کو روکا، اسے گاڑی سے باہر گھسیٹنے کی کوشش کی اور پوری واقعہ فلمایا۔

اس واقعے میں ماروی کو چوٹیں آئیں۔ حملہ آوروں کے ساتھ جھڑپ میں اس کا سکیورٹی اہلکار اور ڈرائیور زخمی ہو گئے۔ کچھ راہگیروں نے حملہ آوروں کو پکڑ کر پولیس کے حوالے کر دیا۔

ماروی کی شکایت پر تینوں افراد کے خلاف ہراساں کرنے سمیت مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ 

مبینہ طور پر ملزمان اپنے علاقے میں خاتون اسسٹنٹ کمشنر کی تعیناتی سے خوش نہیں تھے۔

ماروی اور اس کے چار بہن بھائی سنٹرل سپیریئر سروس کا امتحان پاس کرنے کے بعد روشنی میں آئے

مزید پڑھنے کے لیے یہاں پر کلک کریں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں