مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کا ہیلی کاپٹر حادثے میں پائلٹ ہلاک ہو گیا۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کا ہیلی کاپٹر حادثے میں پائلٹ ہلاک ہو گیا۔

سری نگر – بھارتی مقبوضہ کشمیر میں جمعہ کو لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے قریب چیتا ہیلی کاپٹر گر کر تباہ ہونے سے بھارتی فوج کا ایک کو پائلٹ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔
بھارتی میڈیا کی رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ گر کر تباہ ہونے والا روٹری ونگ طیارہ بیمار سرحدی فورس کے اہلکاروں کو لینے جا رہا تھا۔

میجر سنکلپ یادو، جن کی عمر 29 سال تھی، موقع پر ہی ہلاک ہو گئے جبکہ دوسرے پائلٹ، ایک لیفٹیننٹ کرنل، زخمی ہوئے اور انہیں سری نگر کے ایک طبی مرکز میں لے جایا گیا ہے۔ ابتدائی رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ کریش ہیلی کاپٹر سخت موسمی حالات کے پیش نظر لینڈنگ کے دوران دور جا گرا۔

کاپٹر شریف آباد سے اڑان بھرا تھا اور داوڑ کی طرف بڑھ رہا تھا کہ اس کا رابطہ ٹوٹ گیا۔ دریں اثنا، ریسکیو ٹیمیں روانہ کر دی گئی ہیں جبکہ فضائی جاسوسی ٹیمیں زندہ بچ جانے والوں کی تلاش کر رہی ہیں۔

بدقسمت ہیلی کاپٹر سرحدی فورس کے ایک نیم فوجی سپاہی کو منتقل کرنے کے لیے ریسکیو مشن پر تھا تاہم، یہ ہندوستان کے غیر قانونی طور پر مقبوضہ جموں و کشمیر میں وادی گریز کے تولیال علاقے کے قریب گر کر تباہ ہو گیا۔

ہندوستانی فوج نے ایک بیان بھی جاری کیا جس میں کہا گیا ہے کہ چیتا ہیلی کاپٹر بانڈی پورہ ضلع میں گریز کے باراؤب علاقے میں ایک بیمار فوجی کو آگے کی پوسٹ سے نکالنے کے معمول کے مشن کے دوران گر کر تباہ ہوا۔

درست تفصیلات بعد میں سامنے آئیں گی کیونکہ کورٹ آف انکوائری حادثے کی وجوہات کا پتہ لگائے گی۔
مارچ 2017 سے اب تک بھارتی فوج کے 15 سے زائد ہیلی کاپٹر گر کر تباہ ہو چکے ہیں، جن میں 30 سے ​​زائد اہلکار ہلاک ہو چکے ہیں۔

پچھلے سال پہلے ہندوستانی چیف آف ڈیفنس اسٹاف جنرل بپن راوت اپنی اہلیہ اور دیگر افسران کے ساتھ حالیہ دنوں کے بدترین ہیلی کاپٹر حادثے میں ہلاک ہوگئے تھے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں