آج یوم یکجہتی کشمیر منایا جا رہا ہے۔

آج یوم یکجہتی کشمیر منایا جا رہا ہے۔

اسلام آباد – بھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیر (IIOJ&K) کے عوام کی اقوام متحدہ کی قراردادوں کے تحت ان کے ناقابل تنسیخ حق خودارادیت کی جدوجہد کی مکمل حمایت کے اظہار کے لیے آج ہفتہ کو یوم یکجہتی کشمیر منایا جا رہا ہے۔

5 فروری کو عام تعطیل ہے اور اس دن کو منانے کی تیاریاں زور و شور سے جاری ہیں۔ تاکہ مظلوم کشمیریوں کی حالت زار کو اجاگر کیا جا سکے۔ اور عالمی برادری کو دیرینہ تنازعہ کے حل کے حوالے سے اس کی ذمہ داریاں یاد دلائیں۔

ملک بھر میں زبردست احتجاجی مظاہرے۔ ریلیاں اور پروگرام منعقد کیے گئے۔ جہاں شرکاء نے بھارتی تسلط سے کشمیریوں کی سیاسی، اخلاقی اور سفارتی حمایت کا اعادہ کیا۔

2

یہ دن بھارتی قابض افواج کی طرف سے پنجرے میں بند وادی میں کشمیریوں۔ پر ڈھائے جانے والے بدترین ظلم کو بے نقاب کرنے کے لیے منایا جا رہا ہے۔ ملک بھر میں صبح 10 بجے ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی جائے گی۔

سرکاری نشریاتی ادارے کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ملک کے وفاقی دارالحکومت مظفرآباد۔ گلگت اور چاروں صوبائی ہیڈ کوارٹرز میں بھی یکجہتی واک کا اہتمام کیا جائے گا۔ جبکہ کوہالہ اور پاکستان اور آزاد کشمیر کو ملانے والے دیگر اہم مقامات پر انسانی زنجیریں بنائی جائیں گی۔

قومی ٹیلی ویژن IIOJK کے مظلوم کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیے خصوصی پروگرام بھی نشر کرے گا۔

دریں اثناء مظفرآباد اسمبلی میں گزشتہ سات دہائیوں سے بھارتی مظالم کو سہنے والے مظلوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے قانون ساز اسمبلی کا خصوصی اجلاس منعقد ہوگا۔

کشمیر لبریشن سیل اور پاسبان حریت کی جانب سے شہید برہان مظفروانی چوک مظفرآباد میں یکجہتی کشمیر ریلی نکالی گئی۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں