منی لانڈرنگ کیس میں شہباز شریف اور بیٹے حمزہ کی ضمانت منظور

منی لانڈرنگ کیس میں شہباز شریف اور بیٹے حمزہ کی ضمانت منظور

لاہور – بینکنگ کورٹ نے 25 ارب روپے۔ کے منی لانڈرنگ کیس میں مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف اور ان کے صاحبزادے حمزہ شہباز کی ایک ہفتے۔ کی حفاظتی ضمانت منظور کر لی۔

اگرچہ عدالت نے ان کی ضمانت کی درخواستیں منظور کر لیں۔ جج نے باپ بیٹے کی جوڑی سے کہا کہ وہ نئی ضمانت کی درخواستوں کے لیے متعلقہ عدالت سے رجوع کریں۔ کیونکہ کیس فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) کی درخواست پر دوسری عدالت میں منتقل کیا جا رہا ہے۔

عدالت نے ایف۔ آئی۔ اے۔ کو بھی ہدایت کی کہ کیس کا چالان متعلقہ عدالت میں جمع کرایا جائے۔ کیونکہ یہ اس کے دائرہ اختیار میں نہیں آتا۔

ایف آئی اے نے یہ درخواست منی لانڈرنگ کیس میں بینکرز کے ملوث نہ ہونے کے بعد کی ہے۔

آج کی سماعت کے دوران شہباز اور ان کے بیٹے کے وکیل۔ امجد پرویز نے عدالت سے درخواست کی کہ دونوں کی ضمانت منظور کی جائے۔ شہباز اور ان کے بیٹے نے تحقیقات میں پیش رفت نہ ہونے پر ایف آئی اے پر بھی تنقید کی۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ ان کے مؤکلوں پر مقدمہ درج کیا گیا ہے کیونکہ موجودہ حکومت انہیں “ذلیل” کرنا چاہتی ہے۔ انہوں نے ان الزامات کو بھی جھوٹا اور بے بنیاد قرار دیا۔

درخواست ضمانت کے مطابق ایف آئی اے نے ملزم کو منی لانڈرنگ کی تحقیقات میں شامل ہونے کے لیے 22 جون کو نوٹس جاری کیا حالانکہ نیب پہلے ہی ان الزامات کی تحقیقات کر چکا ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں