خیبر پختونخوا کے 17 اضلاع میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے کے لیے ووٹنگ جاری ہے۔

خیبر پختونخوا کے 17 اضلاع میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے کے لیے ووٹنگ جاری ہے۔

پشاور: خیبرپختونخوا کے 17 اضلاع میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے کے لیے ووٹنگ جاری ہے۔

پولنگ صبح 8 بجے شروع ہوئی جو بغیر کسی وقفے کے شام 5 بجے تک جاری رہے گی۔ پشاور، نوشہرہ، چارسدہ، خیبر، مہمند، مردان، صوابی، کوہاٹ، کرک، ہنگو، بنوں، لکی مروت، ڈیرہ اسماعیل خان، ٹانک، ہری پور، بونیر اور باجوڑ شمال مغربی خطے کے 17 اضلاع ہیں جہاں پولنگ جاری ہے۔

ہفتہ کو (اے۔ این۔ پی۔) کے امیدوار محمد عمر خطاب کے ایک حملے میں قتل ہونے کے بعد ڈی۔ آئی۔ خان کے میئر سٹی کونسل کے لیے پولنگ ملتوی کر دی گئی۔

اس دوران جن اضلاع میں پولنگ ہو رہی ہے وہاں سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔ تقریباً 80,000 پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکار تعینات کیے گئے ہیں۔ صرف صوبائی دارالحکومت پشاور میں گیارہ ہزار سیکیورٹی اہلکار تعینات کیے گئے ہیں۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان کے حکام کے حوالے سے رپورٹس میں کہا گیا ہے۔ کہ 17 اضلاع میں تقریباً 12.66 ملین ووٹرز رجسٹرڈ ہیں۔ جن میں 7.01 ملین مرد ووٹرز اور 5.6 ملین خواتین ووٹرز ہیں۔

0

آج کے انتخابات کے لیے 9 ہزار سے زائد پولنگ اسٹیشنز اور 28 ہزار 892 پولنگ بوتھ بنائے گئے ہیں۔ کم از کم 2507 پولنگ سٹیشنز کو حساس ترین جبکہ 4188 حساس قرار دیا گیا ہے۔

ایک اہلکار نے بتایا۔ کہ صوبائی دارالحکومت کے 200 سے زیادہ حساس پولنگ سٹیشنوں پر پولیس کے علاوہ فرنٹیئر کانسٹیبلری کے اہلکار بھی تعینات کیے جائیں گے۔ تمام پولنگ سٹیشنوں پر تعیناتی مکمل کر لی گئی ہے۔

آئی جی پی پولیس نے پولنگ کے سکیورٹی انتظامات کے حوالے سے ایک اجلاس کی صدارت بھی کی اور افسران کو فول پروف سکیورٹی کو یقینی بنانے کی ہدایت کی۔ فورسز کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ ہتھیاروں کی نشان دہی، ہوائی فائرنگ یا کسی بھی طرح کے امن و امان کو پیدا کرنے کی اجازت نہ دیں۔

دریں اثنا، سابق قبائلی علاقوں کے پولیس اہلکار بھی پہلی بار صوبے کے مختلف اضلاع میں الیکشن سیکیورٹی ڈیوٹی کے لیے تعینات کیے گئے ہیں۔

سٹی میئر اور تحصیل چیئرمین کی 65 نشستوں کے لیے 676 امیدوار الیکشن میں حصہ لے رہے ہیں۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ پاکستان تحریک انصاف واحد جماعت ہے جس نے تمام 65 نشستوں پر امیدوار کھڑے کیے ہیں اور کوئی بھی جماعت 65 امیدوار کھڑے نہیں کر سکی۔
دریں اثناء جے یو آئی (ف) نے 59 امیدوار میدان میں اتارے، اے این پی 55 امیدواروں کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہے، مسلم لیگ (ن) کے 51 اور جماعت اسلامی کے 47 امیدوار الیکشن لڑیں گے، جب کہ پی پی پی کے 43، قومی کے 14 امیدوار میدان میں اتریں گے۔ وطن پارٹی (کیو ڈبلیو پی) اور 305 آزاد امیدواروں نے بھی فتح پر نظریں جمائیں۔

35 اضلاع میں بلدیاتی انتخابات دو مرحلوں میں ہوں گے۔ آج 17 اضلاع میں ووٹنگ ہو رہی ہے۔

مزید پڑھیں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں