پاکستان نے کالعدم مذہبی گروپ سے مذاکرات کے لیے Committee تشکیل دے دی۔

اسلام دشمن عناصر اسلام کے مختلف فرقوں میں اختلاف پیدا کرنا چاہتے ہیں: وزیر نورالحق قادری

پاکستان نے کالعدم مذہبی گروپ سے مذاکرات کے لیے Committee تشکیل دے دی۔

پاکستان کے وزیر برائے مذہبی امور اور بین المذاہب ہم آہنگی پیر نور الحق قادری نے ہفتے کے روز کہا۔ کہ حکومت اور کالعدم تحریک لبیک پاکستان (ٹی۔ ایل۔ پی۔) کے درمیان ثالث کا کردار ادا کرنے کے لیے 12 رکنی Committee تشکیل دی گئی ہے۔

اس بات کا انکشاف وزیر اعظم عمران خان نے بنی گالہ میں علمائے کرام سے ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

قادری نے کہا کہ کمیٹی کے ارکان تنازع کا حل تلاش کرنے کے لیے حکومت کے ساتھ ساتھ کالعدم تنظیم کے رہنماؤں سے بھی رابطے میں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ تمام مذہبی رہنماؤں نے ملک کے وسیع تر مفاد میں مسئلہ کو پرامن طریقے سے حل کرنے کے عزم کا اظہار کیا ہے۔

قادری نے کہا کہ وزیراعظم نے مذہبی اسکالرز کو بتایا کہ پی۔ ٹی۔ آئی۔ حکومت نے ہمیشہ مظاہرین کے ساتھ بامعنی اور سنجیدہ مذاکرات کی حمایت کی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت ملک میں کسی بھی خونریزی کو روکنے کے لیے علمائے کرام کی تجاویز پر غور کرے گی۔

سنی اتحاد کونسل (فیصل آباد) کے صدر صاحبزادہ حامد رضا نے میڈیا کو بتایا۔ کہ وزیراعظم نے اجلاس کے شرکاء کو یقین دلایا ہے۔ کہ حکومت احتجاج کو روکنے کے لیے طاقت کا استعمال نہیں کرے گی۔

2

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے ریاست کی رٹ پر کوئی سمجھوتہ نہ کرنے کے عزم کا اظہار کیا۔ رضا نے مظاہرین سے کہا۔ کہ وہ اسلام آباد کا رخ نہ کریں۔ کیونکہ اس طرح کے اقدامات سے جاری مذاکرات کو نقصان پہنچے گا۔

کالعدم تنظیم کے مظاہرین اس وقت وزیر آباد میں موجود ہیں۔ جہاں رینجرز سمیت سیکیورٹی اہلکاروں نے انہیں آگے بڑھنے سے روکنے کے لیے سڑکوں پر رکاوٹیں کھڑی کر دی ہیں۔

قبل ازیں جمعہ کو پاکستانی صدر عارف علوی نے مذہبی رہنماؤں پر زور دیا کہ وہ کالعدم مذہبی گروہ کے احتجاج کو ناکام بنانے اور اسلام کے امن کے حقیقی پیغام کو فروغ دینے میں اپنا کردار ادا کریں۔

کالعدم ٹی ایل پی کے حامیوں نے آٹھ روز قبل اپنا احتجاجی مارچ شروع کیا تھا۔ اپنے سرکردہ رہنما سعد رضوی کی رہائی کا مطالبہ کر رہے تھے۔ جنہیں اپریل میں اسی طرح کے مظاہروں کے دوران گرفتار کیا گیا تھا۔ یہ کالعدم مذہبی گروہ گزشتہ سال فرانس میں اسلام مخالف خاکوں کی اشاعت پر پاکستان میں فرانسیسی سفیر کو ملک بدر کرنے کا بھی مطالبہ کر رہا ہے۔

..مزید پڑھیں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں