TLP Protests: حکومت نے پنجاب میں 60 دن کے لیے رینجرز تعینات کر دی۔

وزیر داخلہ شیخ رشید کے بڑے بھائی انتقال کر گئے۔

TLP Protests: حکومت نے پنجاب میں 60 دن کے لیے رینجرز تعینات کر دی۔

وزیر داخلہ شیخ رشید نے بدھ کو ٹی ایل پی کی زیر قیادت جاری احتجاج (TLP Protests) کے درمیان پنجاب میں اگلے دو ماہ کے لیے نیم فوجی دستوں کی تعیناتی کا اعلان کیا۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا کہ صوبائی حکومت کو انسداد دہشت گردی ایکٹ کا اختیار دینے کے علاوہ آئین کے آرٹیکل 147 کے تحت رینجرز کے دستے تعینات کیے جا رہے ہیں۔

یہ کہتے ہوئے کہ امن و امان کی صورتحال ہر قیمت پر برقرار رکھی جائے گی۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ کالعدم ٹی۔ ایل۔ پی۔ کے ارکان نے جھڑپوں کے دوران پولیس اہلکاروں کو نشانہ بنانے کے لیے ہتھیاروں کا استعمال کیا۔

انہوں نے کہا کہ اب تک تین پولیس اہلکار اپنی جانیں گنوا چکے ہیں اور سینکڑوں دیگر زخمی ہو چکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ٹی۔ ایل۔ پی۔ ایک کالعدم تنظیم ہے اور اس پر بین الاقوامی پابندیوں کا خدشہ ہے۔

2

گزشتہ روز وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا کہ کابینہ نے کالعدم ٹی۔ ایل۔ پی۔ کو عسکریت پسند تنظیم قرار دینے کا فیصلہ کیا ہے اور کسی کو بھی ریاست کی رٹ کو چیلنج کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ ہر فرد کو اپنا مخصوص عقیدہ رکھنے کا حق ہے تاہم کسی کو ریاست کو بلیک میل کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ ریاست اور حکومت نے انتہائی تحمل کا مظاہرہ کیا اور کالعدم ٹی۔ ایل۔ پی۔ کے پرتشدد مظاہرین کے خلاف طاقت کے استعمال سے گریز کیا۔

چوہدری فواد حسین نے کہا کہ کالعدم ٹی ایل پی کوئی سیاسی تنظیم نہیں بلکہ ایک عسکریت پسند گروپ ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس سے قبل کالعدم ٹی ایل پی کے کارکنوں نے چھ پولیس اہلکاروں کو شہید اور 700 سے زائد افراد کو زخمی کیا تھا اور اس بار انہوں نے مزید تین پولیس اہلکاروں کو شہید اور 49 کو زخمی کیا۔

انہوں نے کہا کہ اب تمام اداروں کی ذمہ داری ہے کہ وہ کالعدم ٹی۔ ایل۔ پی۔ کو عسکریت پسند تنظیم سمجھیں۔

..مزید پڑھیں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں