پاکستان افغانستان کو 5 ارب روپے کی Humanitarian امداد فراہم کرے گا۔

پاکستان افغانستان کو 5 ارب روپے کی Humanitarian امداد فراہم کرے گا۔

پاکستان افغانستان کو 5 ارب روپے کی Humanitarian امداد فراہم کرے گا۔

اسلام آباد-وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے پڑوسی ملک کے اپنے ایک روزہ دورے کے اختتام پر کہا کہ پاکستان افغانستان کو پانچ ارب روپے کی Humanitarian امداد فراہم کرے گا۔

جمعرات کی شام اسلام آباد میں میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے. انہوں نے کہا کہ پاکستان افغانستان سے تازہ پھلوں اور سبزیوں کی ڈیوٹی فری درآمد کی اجازت دے گا. تاکہ دوطرفہ تجارت کو آسان بنایا جا سکے۔

دونوں ممالک کے درمیان بارڈر کراسنگ تجارت کے لیے 24/7 کھلی رہے گی. جبکہ تباہ کن سامان لے جانے والی گاڑیوں کے لیے ایک خصوصی لین قائم کی جائے گی۔

وزیر نے کہا کہ افغان کاروباری حضرات آمد پر ویزا حاصل کر سکتے ہیں جبکہ کابل میں پاکستانی سفارت خانے کو متعدد اندراجات کے لیے پانچ سالہ ویزا جاری کرنے کا اختیار دیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ افغان قیادت نے اسلام آباد کو یقین دلایا ہے. کہ وہ تحریک طالبان پاکستان اور بلوچ لبریشن سمیت کسی کو بھی افغان سرزمین پاکستان کے خلاف استعمال کرنے کی اجازت نہیں دے گی۔

قریشی نے مزید کہا کہ افغانستان میں عبوری حکومت نے پاکستان کو یقین دلایا ہے. کہ وہ CASA-1000 ، T.A.P.I. اور ٹرانس افغان ریلوے منصوبے جیسے منصوبوں کی حمایت کرے گی۔

اس سے قبل آج شاہ محمود قریشی نے افغانستان کے عبوری وزیر اعظم ملا محمد حسن اخوند سے ملاقات کی. اور اپنے افغان بھائیوں کو انسانی امداد پہنچانے کے پاکستان کے عزم سے آگاہ کیا۔

اگست کے وسط میں طالبان کے اقتدار سنبھالنے کے بعد قریشی پہلی بار افغانستان کا دورہ کر رہے تھے۔

..مزید پڑھیں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں