پاکستان اور روس کا فوجی تعاون کو مضبوط کرنے پر اتفاق۔

پاکستان اور روس کا فوجی تعاون کو مضبوط کرنے پر اتفاق۔

پاکستان اور روس کا فوجی تعاون کو مضبوط کرنے پر اتفاق۔

اسلام آباد: پاکستان اور روس نے بدھ کے روز اپنے دوطرفہ فوجی تعاون کو مضبوط بنانے پر اتفاق کیا۔

یہ معاہدہ روس پاکستان مشترکہ فوجی مشاورتی کمیٹی (جے ایم سی سی) کے تیسرے دور کے دوران یہاں منعقد ہوا۔ سیکرٹری دفاع ریٹائرڈ لیفٹیننٹ جنرل میاں محمد ہلال حسین اور روسی نائب وزیر دفاع کرنل جنرل الیگزینڈر وی فومین نے مذاکرات میں اپنے اپنے فریقین کی قیادت کی۔

جے ایم سی سی کو 2018 میں دفاعی تعاون کے سب سے اوپر دو طرفہ فورم کے طور پر قائم کیا گیا تھا۔ اسلام آباد اور ماسکو کے درمیان فوجی شراکت داری ان کے 2014 کے دفاعی تعاون کے معاہدے سے چلتی ہے۔ دونوں ممالک کے درمیان دفاعی تعلقات مستحکم ہوئے ہیں جب سے انہوں نے تعاون کے معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔

جے ایم سی سی کے اجلاس میں دونوں فریقوں نے اپنے دوطرفہ تعلقات کی موجودہ صورتحال کا جائزہ لیا۔ اور باہمی تعاون کے مختلف شعبوں کی کھوج کی۔ جن میں عسکری تربیت ، مشترکہ مشقیں ، انٹیلی جنس تعاون اور دفاعی صنعتی تعاون شامل ہیں۔

دونوں فریقوں نے ملاقات کے دوران کیے گئے فیصلوں کی موثر پیروی اور ان پر عمل درآمد پر اتفاق کیا۔ اس کے علاوہ یہ امید بھی کی کہ جے۔ ایم۔ سی۔ سی دفاعی تعاون کو مضبوط کرتا رہے گا۔

جنرل فومین نے پاک روس دفاعی تعاون کی رفتار کی تعریف کی۔ اور کہا کہ اس کی توسیع علاقائی سلامتی میں ایک اہم عنصر ہے۔ انہوں نے کہا۔ کہ روس اور پاکستان کے درمیان تعمیری تعلقات کی ترقی علاقائی استحکام کو یقینی بنانے کے لیے اہم عنصر ہے۔

جے ایم سی سی کے اجلاسوں کا چوتھا دور روس میں 2022 میں منعقد کرنے پر اتفاق کیا گیا۔

..مزید پڑھیں

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں